حکومت بلوچستان نے صوبے کی شاہراہوں پر تیز  رفتاری کے باعث ہونے والے حادثات پر قابو پانے کے لیے مسافر کوچز میں ٹریکرز کی تنصیب کا فیصلہ کیا ہے۔

صوبائی سیکرٹری ٹرانسپورٹ بشیر  بنگلزئی نے جیو نیوز کو  بتایا کہ بلوچستان میں شاہراہیں دو رویہ نہ ہونے کی وجہ سے ہر سال بڑی تعداد میں ٹریفک حادثات رونما ہوتے ہیں  جن میں ہزاروں افراد جاں بحق و زخمی ہو چکے ہیں۔

سیکرٹری ٹرانسپورٹ نے بتایا کہ صوبے کی شاہراہوں پر تیز رفتاری کے باعث ہونے والے حادثات پر قابو پانے کے لیےصوبائی حکومت کی ہدایت پر محکمہ ٹرانسپورٹ نے مسافر کوچز کے مالکان کے ساتھ مل کر کوچز  میں ٹریکرز کی تنصیب کا فیصلہ کیا ہے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ اب تک صوبے کے مختلف روٹس پر چلنے والی 350کوچز میں سے 80 میں جدید ٹریکنگ سسٹم نصب ہے جس کے تحت مقررہ رفتار سے تیز سفر کرنے والی کوچ کو نہ صرف روک دیا جائے گا بلکہ ڈرائیورپر جرمانہ عائد کیا جائے گا جب کہ ٹریکنگ سسٹم میں لگے جدید کیمروں کی مدد سے حادثات کی وجوہات بھی معلوم کی جائیں گی۔

جواب ڇڏي وڃو

توهان جو برق‌ٽپال پتو شايع نہ ڪيو ويندو. گھربل شعبا مارڪ ڪيل آهن *