کراچی: چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ جسٹس احمد علی نے خیرپور میں 7 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے کے واقعے کا ازخود نوٹس لے لیا۔

چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ نے ڈی آئی جی سکھر فدا حسین مستوئی اورایس ایس پی خیرپور امیر سعود مگسی کو 15 جنوری کو طلب کرلیا۔

تین روز قبل پیش آنے والے واقعے میں ملوث ملزمان کو پولیس تاحال گرفتار نہیں کرسکی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ زیر حراست 10 افراد کے ڈی این اے ٹیسٹ کرالیے ہیں جس کی رپورٹ آنے میں پندرہ سے زائد دن لگ سکتے ہیں۔

 

جواب ڇڏي وڃو

توهان جو برق‌ٽپال پتو شايع نہ ڪيو ويندو. گھربل شعبا مارڪ ڪيل آهن *