دوسری جانب سینیٹر فیصل جاوید کا کہنا تھا کہ  لانگ مارچ مذاق بن گیا، پی ڈی ایم کو مسترد کرنے پر قوم کو سلام پیش کرتے ہیں۔

ادھر وفاقی وزیر  برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ  لانگ مارچ ملتوی ہونا خوش آئند اور مثبت پیشرفت ہے جس سے  سیاسی استحکام میں اضافہ ہو گا۔

فواد چوہدری نے کہا کہ  پیپلز پارٹی کا فیصلہ حقائق کے قریب ہے، اصل سیاست ایوان کے اندر  ہوتی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روزپی ڈی ایم کے سربراہی اجلاس کے بعد جمعیت علمائے اسلام و اپوزیشن اتحاد کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پریس کانفرنس کے دوران حکومت کے خلاف لانگ مارچ ملتوی کرنے کا اعلان کیا تھا۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ ہم نے پیپلزپارٹی کو موقع دیا ہے اور ہمیں ان کے فیصلے کا انتظار ہوگا لہٰذا 26 مارچ کا لانگ مارچ پیپلزپارٹی کے جواب تک ملتوی تصور کیا جائے۔

جواب ڇڏي وڃو

توهان جو برق‌ٽپال پتو شايع نہ ڪيو ويندو. گھربل شعبا مارڪ ڪيل آهن *