کراچی میں ماں نے رقم کیلئے اپنے بچے کو ہی اغواء کرلیا۔

پولیس کے مطابق مبینہ ٹاؤن کے رہائشی ماں نے رقم کیلئے اپنے بچے اور خود کے اغواء کا ڈرامہ رچایا، پولیس نے 6 گھنٹے میں 10 سال کے بچے کو بازیاب کراکے باپ کے حوالے کردیا۔

پولیس کے مطابق بچے کے والد کو اپنی اہلیہ کے موبائل سے بچے کے اغواء اور تاوان کی کال موصول ہوئی اور فون پر کسی کو بتانے پر بچے کو مارنے کی دھمکی دی گئی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ والد کو تاوان کی رقم ساڑھے 4 لاکھ روپے لیکرایک اسپتال بلایا گیا جس پر اسپتال میں سادہ کپڑوں میں پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا، جب والد رقم لیکر پہنچا تو بچے کی ماں رقم وصول کرنے آئی اور کہا کہ ملزمان دائیں بائیں گھوم رہے ہیں، رقم نہ دی تو بچے کو ماردیں گے۔

پولیس کے مطابق خاتون رقم لیکر ہاسپٹل گئی اور اندر گھومتی رہی اور پھر ایمرجنسی وارڈ کے واش روم میں پیسے چھپائے اوراپنے بہنوئی سیکیورٹی گارڈ کے پاس سے بچے کو لیکر آئی۔

پولیس نے بتایا کہ خاتون سے معلومات لی گئی تو پتا چلا وہ خود اغواء کا ڈرامہ کررہی تھی۔

پولیس کے مطابق ابتدائی تفتیش میں معلوم ہوا ہے کہ خاتون نے زیورات گروی رکھے تھے اور شوہر پیسے نہیں دے رہا تو اس لیے یہ ڈرامہ کیا گیا، خاتون نے بتایا کہ موبائل فون میں مردانہ آواز کا سسٹم موجود تھا۔

پولیس نے خاتون حمیرا اور اس کے بہنوئی ہاشم کوگرفتار کرکے تاوان کی رقم اور موبائل فونز برآمد کرلیے

جواب ڇڏي وڃو

توهان جو برق‌ٽپال پتو شايع نہ ڪيو ويندو. گھربل شعبا مارڪ ڪيل آهن *