مسلم لیگ ن کے صدر  اور  اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے  علاج کے لیے بیرون ملک جانے اور بلیک لسٹ سے اپنا نام خارج کروانے کے لیے لاہورہائی کورٹ سے رجوع کرلیا ۔

شہباز شریف نے علاج کے لیے بیرون ملک جانے اور بلیک لسٹ سے اپنا نام خارج کرانے کے لیے سینیٹر اعظم نذیر تارڑ اور ایڈووکیٹ امجد پرویز کے ذریعے لاہور ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی  ہے۔

 درخواست میں وفاقی حکومت ،وزارت داخلہ اور ایف آئی اے کو فریق بنایا گیا ہے، درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ اُنہیں آشیانہ اقبال اور رمضان شوگر ملز کیس میں لاہور ہائی کورٹ سے ضمانت ملی جس کے بعد وہ بیرون ملک گئے اور واپس بھی آگئے۔

درخواست میں کہا گیا ہےکہ وفاقی حکومت کی جانب سے شہباز شریف کا نام بلیک لسٹ میں شامل کرنا بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے، حکومت کو بلیک لسٹ سے نام نکالنے کا حکم دیا جائے۔

 اعظم نذیر تارڑ نے درخواست میں کہا کہ شہبازشریف کینسر میں مبتلا رہے ہیں، ان کا چیک اپ کے لیے بیرون ملک جاناضروری ہے۔

لاہورہائی کورٹ نے شہبازشریف کے علاج کے لیے بیرون ملک جانے اور بلیک لسٹ سے نام خارج کروانے کی درخواست سماعت کےلیے مقرر کردی ہے ۔

 جسٹس علی باقر نجفی کل 7مئی کو شہباز شریف کی درخواست پر سماعت کریں گے۔

جواب ڇڏي وڃو

توهان جو برق‌ٽپال پتو شايع نہ ڪيو ويندو. گھربل شعبا مارڪ ڪيل آهن *